بیسن میں ایک چیز مکس کر کے لگائیں 10 منٹ میں ہاتھوں پاؤں کا رنگ گورا کریں

اس تحریر میں ہم بہت ہی بہترین سا ہاتھوں پاؤں کا رنگ گورا کرنے کا نسخہ بتارہے ہیں اس میں ہم نے صرف دو چیزیں استعمال کرنی ہیں اور یہ دونوں چیزیں آپ کے ہاتھوں پاؤں کا کلر فیئر کریں گی بہت اچھی ہیں آپ اس کو ونٹر میں بھی استعمال کرسکتے ہیں سمر میں بھی استعمال کرسکتے ہیں دونوں موسم کے لئے یہ بہت اچھا ماسک ہے اگر آپ کے ہاتھوں پر سیاہ دھبے ہیں یا آپ کے ہاتھوں پاؤں کا کلر اچھا نہیں ہے تو اس کے لئے یہ ماسک بہت اچھا ہے۔اس میں صرف دو چیزیں استعمال کریں گے جو کہ آپ کے ہاتھوں پاؤں کا کلر صرف چند منٹوں میں ہی فیئر کر دیں گے ۔

صرف دو اجزاء ہی آپ اس میں استعمال کریں گے سب سے پہلا بیسن ہے ۔ دوسری چیز دودھ ہے کچا دودھ بہت اچھا ہوتا ہے ہماری سکن لائٹننگ کے لئے ۔ایک چمچ بیسن لیجئے اور اس میں 2 چمچ دودھ شامل کیجئے اور اچھی طرح مکس کیجئے تا کہ ایک سموتھ سا پیسٹ تیار ہوجائے اگر دودھ کم ہوجائے تو اور بھی شامل کر سکتے ہیں ۔ جب ایک کریم کی شکل اختیار کر لے تو اس کو اپنے ہاتھوں کے اوپر اپلائی کیجئے۔ایک اچھی تھک سی لیئر لگا دیجئے

اور جب یہ ڈرائی ہو جائے تو اس کو رب کر کے اتار دیجئے اس سے آپ سے تمام ڈیڈ سیلز ختم ہوجائے گے اور آپ کا کلر کافی فیئر ہوگا ۔صرف دو چیزیں استعمال کی گئی ہیں اس کو گھر پر روزانہ استعمال کرسکتے ہیں ہمارے ہاتھ پاؤں سافٹ ہوں گے کلر بہت صاف ہوجائے گا۔ہم اپنے اردگرد ایسی خواتین کو دیکھتے ہیں جو 40یا 50سال کی ہونے کے باوجود نہ صرف خوبصورت اور پرکشش نظر آتی ہیں بلکہ اپنی عمر سے کہیں زیادہ جواں بھی دکھائی دیتی ہیں

اس کی بنیادی وجہ ان کی روزمرہ کی عادتیں ہیں اس کے برعکس ہم اکثر ایسی خواتین کو دیکھتے ہیں جو 25سال کی ہونے کے باوجود 30یا35برس کی محسوس ہوتی ہیں اس کی وجہ وہ عادتیں ہیں جن سے لاعلمی ہمیں تیزی سے بڑھاپے کی جانب راغب کررہی ہوتی ہیں جواں عمر نظر آنے کے لیے دنیا بھر میں امیر افراد مختلف جتن کرتے ہیں مگر چند عام عادات کو ترک کردینابڑھتی عمر کے اثرات کو ظاہر ہونے سے روکنے میں مددگار ثابت ہوتا ہے وہ عادات کونسی ہیں آئیے ان کے بارے میں جانتے ہیں ایک وقت میں مختلف کام سرانجام دینا:اکثر خواتین کی عادت ہوتی ہے

کہ وہ ایک وقت میں کئی کام کرنا پسند کرتی ہیں اور اس خوبی کو وہ اپنے لیے فخر کی بات سمجھتی ہیں لیکن آپ کی اس عادت کاخمیازہ آپ کے جسم کو ادا کرنا پڑتا ہے بہت زیادہ تناؤ جسمانی خلیات کو نقصان پہنچانے اور عمر کی رفتار بڑھانے کا سبب بنتا ہےاس لیے کوشش کریں کہ آپ ایک وقت میں ایک ہی کام کریں ورزش کرنا :روزانہ ورزش کرنے سے عمر کے بڑھتے اثرات کو بھی بآسانی چھپایا جاسکتا ہے لیکن ہم میں سے زیادہ تر افراد ورزش صرف اس وقت کرتے ہیں جب ان کا وزن بڑھ جائےچند ہفتے جم جوائن کرنے سے آپ صرف چند پاؤنڈ وزن میں کمی لاپاتی ہیں

تاہم روزانہ ورزش کرنے کا معمول بنالیا جائے تو یہ آپ کا وزن بڑھنے نہیں دے گی ساتھ ہی آپ کو فٹ، چست اورموٹاپے جیسی بیماریوں سے دور رکھے گی۔دوستوں کو وقت نہ دینا:ہم اپنی زندگی کی مصروفیات میں اس قدر مگن ہوجاتے ہیں کہ اکثر دوست احباب بہت پیچھے رہ جاتے ہیں لیکن کیا آپ جانتے ہیں کہ دوستوں کے ساتھ گزارا گیا وقت جسم پر عمر کے اثرات کی روک تھام کیلئے مددگار ثابت ہوتا ہے وہ خواتین جو صرف مصروفیات کے سبب ذہنی تناؤ کا شکار رہتی ہیں

ان پر عمر کے اثرات وقت سے پہلے ظاہر ہونا شروع ہوجاتے ہیں۔سونے کا انداز:عام طور پر اوندھے منہ سونا اکثر افراد کی عادت ہے لیکن آپ کے سونے کا انداز بھی آپ کے چہرے کی رعنائی دور کرنے اور جھریاں پڑنے کا سبب بن سکتا ہے لہذا ہمیشہ خیال رکھیں کہ کبھی اوندھے منہ نہ سو ئیں اور سیدھا لیٹ کر سونے کو اپنی عادت بنائیںچہرے پر تکیے کا دبائو بھی جھریوں کا باعث بن سکتا ہے

اس لیے سوتے وقت آرام کیلئے چہرے پر کسی قسم کا تکیہ یا کشن رکھنے سے گریز کریں۔گردن اور ہاتھوں پاؤں پر توجہ بھی ضروری:ہم میں سے اکثر خواتین خوبصورت اور کم عمر نظر آنے کے لیےچہرے کی جلد کا تو بے حد خیال رکھتی ہیں لیکن گردن کو بھول جاتی ہیں جس کے نتیجے میںگردن کا رنگ چہرے سے مختلف لگتا ہے اس کی جِلدلچک دارہوجاتی ہے اور جھریاں پڑنے سے آپ پر بڑھاپے کے اثرات نمایاں ہوجاتے ہیں عمر بڑھنے کے ساتھ گردن پر لائنیں زیادہ نمایاں ہونے لگتی ہیں

جنہیں اچھے سے اچھا میک اَپ آرٹسٹ بھی نہیں چھپا پاتا اسی لئے چہرے کے ساتھ گردن کو بھی اتنی ہی توجہ دی جائے چہرے پر مساج کے وقت گردن کا مساج بھی ہر گز نہ بھولیں جبکہ اینٹی ایجنگ ماسک چہرے پر لگانے کے ساتھ ساتھ گردن پر بھی اپلائی کیا جائے یہی بات ہاتھوں کیلئے بھی ہے جو خواتین کی شخصیت کی عکاسی کرتے ہیں لازمی نہیں کہ صرف چہرہ ہی خوبصورت لگے ہاتھ اور پاؤں پر بھی خصوصی توجہ دینی ہوتی ہے لہٰذا مینی کیور اور پیڈی کیور کا بھی خاص خیال رکھا جائے دھوپ میں نکلتے وقت ہاتھ اور پیروں پر بھی سن بلاک لازمی لگائیں۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.