جب اُمیدیں ٹوٹ جا ئیں اور نا کامی نظر آ نے لگے ؟

بہتر کام نہ ہونے کا بہانہ وقت نہ ہونے کی وجہ نہ بنا ئیں، کیونکہ آپکا دن بھی چوبیس گھنٹے کا ہو تا ہے اور کا میاب لوگوں کا بھی ! سپنے ان کے پورے نہیں ہو تے ہیں جن کے باپ بڑے ہو تے ہیں سپنے اُن کے پورے ہو تے ہیں جو ضد پہ اڑے ہوتے ہیں!

وقت نظر نہیں آتا مگر دیکھا کر اور سمجھا کر بہت کچھ جا تا ہے ! لوگ جب آپ کو سمجھ نہیں پا تے تو آپ کو غلط قرار دے دیتے ہیں! خود کے اوپر اتنا کام کر و کہ لوگوں کو اپنی اوقات اپنے آپ نظر آ نے لگے

صرف اللہ تعالیٰ ہی ہے جس پر امید رکھو تو اندھیرے میں بھی راستہ نکل آ تا ہے ! جن لوگوں کو کسی چیز کا لالچ نہیں ہو تا نہ وہ اپنا کام بڑی ایمانداری سے کر تے ہیں۔ خواب ٹوٹے ہیں مگر حوصلے زند ہ ہیں ہم وہ ہیں جہاں مشکلیں شرمندہ ہیں۔ زندگی ایک رات ہے جس میں نہ جانے کتنے خواب ہیں جو مل گیا وہ اپنا جو ٹوٹ گیا وہ سپنا ہے۔

علم تمہیں راہ دیکھتا ہے اور عمل تمہیں مقصد تک پہنچاتا ہے۔ کل بھی میرا وجود تھا د ش م ن کو نا گوار کچھ لوگ میرے نام سے جلتے ہیں آج بھی ! پتہ نہیں کیسے پر کھتا ہے میرا خدا مجھے امتحان بھی مشکل لیتا ہے اور ہارنے بھی نہیں دیتا۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.